Yasir Shah Became League Sniper

یاسر شاہ نے ٹیسٹ کرکٹ کی 143 سالہ تاریخ کا بڑااعزاز حاصل کرلیا

Yasir Shah Became League Sniper

کیریئر کےپہلے 40 ٹیسٹ میچزمیں زیادہ شکار کرنے والے لیگ سپنر
بن گئےقومی ٹیم کے لیگ سپنر یاسر شاہ نے وہ کردکھایا جو شین وارن یا انیل
کمبلے بھی نہیں کرسکے، یاسر شاہ نے انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز
میں چار وکٹیں حاصل کرکے اپنی ٹیسٹ وکٹوں کی تعداد 217 کرلی جس
کے ساتھ ہی وہ 40 ٹیسٹ میچز کے بعد زیادہ شکار کرنے والے لیگ سپنر
بن گئے ہیں،

چونتیس سالہ لیگ سپنر نے سابق آسٹریلیوی لیگ سپنر کلیری گریمٹ کا
ریکارڈ توڑا جنہوں نے 37 ٹیسٹ میچز میں 216 وکٹیں حاصل کی تھیں۔
یاسر شاہ لیجنڈری آسٹریلوی لیگ سپنر شین وارن اور سابق بھارتی سپنر انیل
کمبلے سے بھی آگے نکل گئے ہیں جنہوں نے اپنے کیریئر کے پہلے 40 ٹیسٹ
میں بالترتیب 187 اور 168 شکار کیے تھے، انہوں نے دانش کنیریا اور
مشتاق احمد کو بھی پیچھے چھوڑا جنہوں نے اپنے پہلے 40،40 ٹیسٹ میچز میں
بالترتیب 169 اور 164 شکار کیے تھے۔

اس فہرست میں تیسرا نمبر سابق آسٹریلوی لیگ سپنر سٹورٹ میک گل کا ہے
جنہوں نے اپنے پہلے 40 ٹیسٹ میچز میں 198 وکٹیں حاصل کی تھیں
، بھارت کے بی ایس چندرشیکھر 175 شکاروں کے ساتھ پانچویں اور
سابق آسٹریلوی لیگ سپنر رچی بینیو 152 وکٹیں حاصل کرکے اس فہرست
میں دسویں پوزیشن پر براجمان ہیں،

چین نے پاکستان کو 1 ارب ڈالرز کا قرضہ دے دیا

Yasir Shah Became League Sniper

پچھلے پانچ سالوں کے دوران ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کی بہت سی اہم
فتوحات لیگ سپنر یاسر شاہ کی وجہ سے ہوئیں۔ یاسر شاہ مخصوص مسکراہٹ
کے ساتھ حریف بلے بازوں کو آؤٹ کرکے اپنے جشن منانے کے انوکھے
انداز کے لئے مشہور ہوگئے ہیں۔

یاسر شاہ نے اب تک 39 ٹیسٹ میچوں میں 213 وکٹیں حاصل کی ہیں
، جن میں سے پاکستان نے جیتنے والے 18 ٹیسٹ میچوں میں 126 وکٹیں
حاصل کیں۔اپنی اننگز میں 41 رنز دینا اور آٹھ وکٹیں لینا عبد القادر اور سرفراز
نواز کے بعد کسی بھی پاکستانی باؤلر کی تیسری بہترین کارکردگی ہے۔

وہ اس وقت پاکستان کے سب سے زیادہ وکٹ لینے والے چھٹے کھلاڑی ہیں
اور ڈینش کنیریا کے کسی بھی پاکستانی سپنر کے 261 وکٹوں کے ریکارڈ کے
قریب ہیں۔یاسر شاہ ٹیسٹ میچوں کی تاریخ کا پہلا سپنر ہے جس نے لگاتار
پانچ میچوں میں ایک ہی اننگز میں پانچ یا زیادہ وکٹیں حاصل کیں۔ وہ33ٹیسٹ
میچوں میں وکٹوں کی ڈبل سنچری مکمل کرنے والے کم ترین بولر ہیں۔ انہوں
نے 36 ٹیسٹ میچوں میں 200 وکٹیں لینے کا آسٹریلیائی سپنر کلیئر گریم کا
ریکارڈ توڑ دیا۔

اس حوالے سے مزید پڑھنے کے لیئے یہاں کلک کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں