عمران خان نے اقوام متحدہ میں آلودگی کے مسئلہ کو اٹھایا تو لوگوں کو اس کی اہمیت کا اندازہ ہوا

مئیر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ دنیا بھر میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ ماحولیاتی تبدیلی کا ہے ، پہلی مرتبہ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ میں خطاب کے دوران اس مسئلے کو اٹھایا تو لوگوں کو اس کی اہمیت کا اندازہ ہوا،کراچی کی آلودگی پر اگر قابو نہ پایا گیا تو اس کے بہت نقصانات ہوں گے۔


جاری اعلامیہ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو کڈنی ہل پارک میں قطر کے ڈپٹی قونصل جنرل ناصر حامد ایچ۔ایچ الخلیفی کے ہمراہ پودا لگانے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن ( پی ایم ای) کی جانب سے کڈنی ہل پارک پر ممبران کے لئے سٹیزن واک کا اہتمام کیا گیاجس میں سینکڑوں ڈاکٹروں اور ان کے اہل خانہ نے شرکت کی۔

اس موقع پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سیف الرحمن اور پی ایم اے کے عہدیداروں بھی موجود تھے۔ مئیر کراچی نے کہا کہ بلدیہ عظمی کراچی اپنے وسائل میں کوشش کر رہی ہے کہ شہر میں زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جائیں اور پار ک تعمیر ہوں۔

انہوں نے کہا کہ کڈنی ہل،احمد علی پارک 1962 میں بلدیہ کراچی کے حوالے ہوا تھا مگر تجاوزات کی وجہ سے یہاں پارک تعمیر نہیں ہوا حالانکہ یہ بہت ضروری تھا۔


انہوں نے سپریم کورٹ کا شکریہ ادا کیا کہ اس کے حکم پر یہاں اتنی پرانی تجاوزات ختم ہوئیں اور اب یہ پارک تعمیر ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میٹروپولیٹن کمشنر نے اس پارک کی بحالی پر بہت محنت کی ہے 19 ہزار سے زیادہ پودے لگ چکے مگر ایک پیسہ بھی خرچ نہیں ہوا ہے ۔

مئیر کراچی نے کہا کہ یہ سلسلہ چلتا رہا تو آئندہ 5 سال بعد یہ بہت بڑا جنگل ہو گا جو ہمارے بچوں کے لئے بہت خوبصورت جگہ ہو گی ،کوشش کر رہے ہیں کہ شہری اس عمل میں شامل ہوں۔


انہوں نے کہا کہ جب یہ درخت بڑے ہوں گے تو کراچی کے لوگوں کے لئے یہ بہت بڑا سرمایہ ہو گا۔ میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سیف الرحمن نے کہا کہ درخت ختم ہونے کے بعد پرندے ہم سے روٹھ گئے تھے، یہ پارک جب سٹی جنگل بنے گا تو پرندے اس شہر میں واپس آئیں گے۔ فیصل ایدھی نے کہا کہ ہمارے پاس 5 ہزار درخت موجود ہیں جو ہم فروری میں یہاںلگائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں