وزیر اقتصادی امور حماد اظہر کا کہنا ہے کہ معاشی چیلنجز کے باوجود حکومت بہتری کی جانب گامزن ہے

اسلام آباد:(26 نومبر 2019)وزیر اقتصادی امور حماد اظہر کا کہنا ہے کہ معاشی چیلنجز کے باوجود حکومت بہتری کی جانب گامزن ہے،پاکستان میں معیشت مستحکم کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں ایشیائی ترقیاتی بینک کے زیراہتمام انوویٹو فنانس فورم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اقتصادی امور حماد اظہر کا کہنا تھا کہ روزگاری کے خاتمے کیلئے کامیاب جوان پروگرام کاآغازکیاجارہاہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو روزانہ کی بنیاد پرمعاشی صورتحال سے آگاہ کیاجارہاہے جبکہ کاروبارکوآسان بنانے کیلئے پالیسیاں مرتب کی گئی ہیں۔حماد اظہرکے مطابق حکومت ملک میں تجارت کاحجم بڑھارہی ہے اور خواتین کیلئے درمیانے اورچھوٹے درجے کے کاروبارکاپروگرام شروع کیاگیاہے۔چھوٹے اوردرمیانے درجے کاکاروبار90فیصدتک جانے سے معیشت بہترہوگی۔

اس موقع پر چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا کہ ملک میں 31 لاکھ افراد صنعتی شعبے سے وابستہ ہیں، 31 لاکھ افراد میں سے صرف 43 ہزار ٹیکس نیٹ میں آتے ہیں،معاشی نظام بہتر ہونے تک ٹیکس وصولی کا ہدف پورا نہیں کیا جاسکتا، ٹیکس، سرمایہ کاری، چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار باہم منسلک ہیں۔چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ اسمال میڈیم سیکٹر میں کم قرض کی وجوہات کاروبار کا غیر دستاویزی ہونا ہے، اسمال میڈیم سیکٹر دستاویزی نہ ہونے سے زیادہ قرض حاصل نہیں کرسکا،اسمال میڈیم سیکٹر کے لوگ ٹیکس نظام میں شامل ہی نہیں ہونا چاہ رہے ہیں۔شبر زیدی کا مزید کہنا تھا کہ ملک میں بجلی کے 31 لاکھ صنعتی اور کمرشل صارفین ہیں، اکتیس لاکھ میں صرف 43 ہزار سیلز ٹیکس رجسٹر ہیں،انہوں نے کہا کہ اسمال میڈیم سیکٹر مکمل دستاویزی نہیں ہوگا تو قرض کا تناسب نہیں بڑھے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں